پی ٹی آئی کی قید کارکن صنم جاوید مریم نواز کے خلاف الیکشن لڑیں گی۔

پی ٹی آئی کارکن صنم جاوید خان (بائیں) اور مسلم لیگ ن کی سینئر نائب صدر مریم نواز۔ — Instagram/@sanamjavaidkhan/@maryamnawazofficial
پی ٹی آئی کارکن صنم جاوید خان (بائیں) اور مسلم لیگ ن کی سینئر نائب صدر مریم نواز۔ — Instagram/@sanamjavaidkhan/@maryamnawazofficial
 

لاہور: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی زیر حراست کارکن صنم جاوید خان آئندہ 8 فروری کو ہونے والے عام انتخابات میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کی سینئر نائب صدر مریم نواز کے مدمقابل ہوں گی۔ سال

سیاسی کارکن، اس کے والد نے بتایا جیو نیوز منگل کو لاہور کی صوبائی اسمبلی کی نشست سے مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما کے خلاف الیکشن لڑیں گے۔ انہوں نے کہا کہ صنم لاہور کے حلقہ پی پی 150 سے کاغذات نامزدگی جمع کرائیں گی۔

نوجوان سیاسی کارکن پارٹی کے ان متعدد کارکنوں اور حامیوں میں شامل ہے، جس کی بنیاد سابق وزیر اعظم عمران خان نے رکھی تھی، جسے 9 مئی کے فسادات کے تناظر میں حراست میں لیا گیا تھا، جو کہ پی ٹی آئی کے سابق سربراہ کی بدعنوانی کے مقدمے میں گرفتاری کے بعد ہوا تھا۔

صنم پر اس سال کے شروع میں پرتشدد مظاہروں کے دوران لاہور میں کور کمانڈر ہاؤس پر حملے اور کنٹونمنٹ کے علاقے میں پولیس کی گاڑیوں کو نذر آتش کرنے سمیت متعدد مقدمات درج تھے۔

صنم کے والد نے کہا کہ جیل میں بند کارکن پی ٹی آئی کے ٹکٹ پر الیکشن میں حصہ لیں گے اور مزید کہا کہ صنم خواتین کی مخصوص نشست کے لیے کاغذات نامزدگی بھی جمع کرائیں گی۔

والد نے کہا کہ ہم اس کے (صنم جاوید کے) کاغذات نامزدگی داخل کرنے کے لیے دستاویزات جمع کر رہے ہیں۔

دریں اثناء مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نے ابھی تک یہ اعلان نہیں کیا کہ وہ کس حلقے سے الیکشن میں حصہ لیں گی۔

مسلم لیگ (ن) کے پارلیمانی بورڈ نے پارٹی ٹکٹ دینے کے لیے امیدواروں کے انٹرویو کے لیے اجلاس جاری رکھے ہوئے ہیں۔

انتخابی شیڈول کے مطابق، الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کل (20 دسمبر) سے متوقع امیدواروں سے کاغذات نامزدگی وصول کرنا شروع کر دے گا۔

الیکشن ایکٹ 2017 کے مطابق انتخابی ادارے کی جانب سے ڈسٹرکٹ ریٹرننگ افسران (DROs) اور ریٹرننگ افسران (ROs) کی حلف برداری کے بعد یہ عمل آج (منگل) کو شروع ہونا ہے۔

 

About The Author

Leave a Reply

Scroll to Top