ڈی آئی خان حملے میں 3 سیکیورٹی اہلکار شہید

آزاد جموں و کشمیر میں ایک پولیس اہلکار پہرہ دے رہا ہے۔ - PPI/فائل
آزاد جموں و کشمیر میں ایک پولیس اہلکار پہرہ دے رہا ہے۔ – PPI/فائل

ڈی آئی خان: پولیس نے جیو نیوز کو بتایا کہ منگل کو درابن میں ایک دہشت گردانہ حملے میں سیکیورٹی فورسز کے کم از کم تین اہلکار شہید اور 16 زخمی ہوگئے۔

دہشت گردوں نے دھماکہ خیز مواد سے بھری گاڑی کو سیکورٹی فورسز کے زیر استعمال عمارت سے ٹکرایا۔ پولیس نے مزید کہا کہ دھماکے کے نتیجے میں عمارت کو شدید نقصان پہنچا ہے۔

حملے کے بعد سیکیورٹی فورسز نے جوابی کارروائی میں تین دہشت گردوں کو بھی مار گرایا۔

کے پی میں 1,050 دہشت گرد حملوں میں 470 افراد ہلاک ہوئے۔

سبکدوش ہونے والے سال میں ملک میں بالعموم اور خیبرپختونخواہ میں بالخصوص دہشت گردی سے متعلق واقعات میں خطرناک حد تک اضافہ دیکھنے میں آیا کیونکہ صوبے میں کم از کم 470 سیکیورٹی اہلکار اور عام شہری مارے گئے۔

جیو نیوز کے پاس دستیاب اعدادوشمار کے مطابق صرف ایک سال میں دہشت گردی سے متعلق 1050 واقعات میں 470 افراد ہلاک ہوئے۔

صوبائی محکمہ داخلہ اور قبائلی امور کے ریکارڈ کے مطابق گزشتہ تین سالوں کے دوران دہشت گردی سے متعلق 1,823 واقعات میں 698 سیکیورٹی اہلکار اور شہری مارے گئے۔

کے پی میں پاک افغان سرحد کے ساتھ سات علاقے سبکدوش ہونے والے سال کے دوران "دہشت گردی کے مرکز” رہے۔ ان علاقوں میں پشاور، خیبر، شمالی وزیرستان، جنوبی وزیرستان، ڈیرہ اسماعیل خان، باجوڑ اور ٹانک شامل ہیں۔

دہشت گردی سے متعلق 1050 واقعات میں سے 419 بندوبستی، 631 سابق فاٹا، 201 شمالی وزیرستان، 169 خیبر، 121 جنوبی وزیرستان، 98 ڈی آئی خان، 62 باجوڑ، 62 پشاور اور 61 واقعات رپورٹ ہوئے۔ .

About The Author

Leave a Reply

Scroll to Top