کراچی کی فرنیچر مارکیٹ میں آتشزدگی سے جاں بحق افراد کی تعداد 5 ہو گئی۔

فائر فائٹرز 06 دسمبر 2023 کو کراچی میں عائشہ منزل میں فرنیچر کی دکانوں میں لگنے والی آگ پر قابو پانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ — آن لائن
فائر فائٹرز 06 دسمبر 2023 کو کراچی میں عائشہ منزل میں فرنیچر کی دکانوں میں لگنے والی آگ پر قابو پانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ — آن لائن
 

کراچی کے فیڈرل بی ایریا میں بدھ کو لگنے والی عمارت میں آگ لگنے سے ہلاکتوں کی تعداد پانچ ہو گئی ہے جب کہ آگ پر قابو پالیا گیا اور عمارت کو کولنگ کا عمل جمعرات کو مکمل کر لیا گیا۔

یہ افسوسناک واقعہ اس وقت پیش آیا جب ڈسٹرکٹ سینٹرل کے فیڈرل بی ایریا میں عائشہ منزل کے قریب شاہرہ پاکستان پر عرشی شاپنگ سینٹر نامی چھ منزلہ کمرشل و رہائشی عمارت میں آگ لگ گئی۔

واقعے کے وقت عمارت کے اندر مکین موجود تھے جس کی وجہ سے صورت حال مزید افسوسناک ہوگئی۔

عینی شاہدین کے مطابق آگ اس وقت لگی جب گراؤنڈ فلور پر ویلڈنگ کے کام کے دوران ایک دکان میں آگ لگ گئی۔ بدقسمتی سے، آگ کے شعلے بعد میں دیگر دکانوں تک پھیل گئے جو عمارت کے نیچے فرنیچر مارکیٹ کا حصہ تھیں۔

عائشہ منزل فرنیچر مارکیٹ میں گراؤنڈ فلور پر 250 سے زائد دکانیں ہیں، جب کہ میزانائن فلور پر فرنیچر، گدے اور پیٹرولیم مصنوعات رکھی گئی ہیں۔ مزید برآں، اوپری چار منزلوں پر 450 رہائشی فلیٹ ہیں۔

خدشہ ظاہر کیا جا رہا تھا کہ آگ کی وجہ سے عمارت کمزور ہو گئی ہے اور کسی بھی وقت گر سکتی ہے۔

تاہم، عمارت کو دو گھنٹے کے اندر مکمل طور پر خالی کرالیا گیا، کیونکہ فائر ڈپارٹمنٹ کی ٹیمیں جائے وقوعہ پر پہنچ گئیں اور اطلاع ملنے کے بعد آگ پر قابو پانے کے لیے تیزی سے کام کیا۔

آگ کے نتیجے میں مرنے والوں کی تعداد جو پہلے چار تھی اب بڑھ کر پانچ ہو گئی ہے جب ریسکیو اہلکاروں نے آگ سے متاثرہ رہائشی عمارت سے ایک اور لاش نکالی ہے۔

ریسکیو حکام نے انکشاف کیا کہ شاپنگ مال کی پہلی منزل سے ملنے والی لاش کو اسپتال لے جایا گیا ہے۔ "مقتول کی موت دم گھٹنے اور جھلسنے سے ہوئی۔”

ریسکیو حکام کا کہنا ہے کہ واقعے میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد 5 ہو گئی ہے، ایک شخص زخمی ہے۔ علاوہ ازیں رات گئے تک جاری رہنے والی امدادی کارروائیاں مکمل کر لی گئی ہیں۔

حکام کے مطابق آگ لگنے کے نتیجے میں اپارٹمنٹ بلڈنگ کے گراؤنڈ فلور اور میزانین فلور کو شدید نقصان پہنچا ہے۔

کراچی میونسپل کارپوریشن (KMC)، فائر بریگیڈ اور پاکستان نیوی کے فائر فائٹنگ اسنارکلز نے آگ بجھانے کے لیے ریسکیو آپریشن میں حصہ لیا۔

حکام نے یہ بھی انکشاف کیا کہ آگ لگنے سے لاکھوں روپے مالیت کا سامان مکمل طور پر جل کر خاکستر ہو گیا اور متعدد موٹر سائیکلیں اور گاڑیاں بھی جل گئیں۔

گزشتہ رات لگنے والی آگ کے بعد سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی (SBCA) نے عرشی شاپنگ سینٹر کو سیل کر دیا۔

ایس بی سی اے نے کہا، "معائنے کے بعد، یہ فیصلہ کیا جائے گا کہ عمارت استعمال کے لیے موزوں ہے یا نہیں۔”

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Scroll to Top